بجلی، پانی کی عدم دستیابی کے خلاف سیاسی جماعتوں کا جلسہ

صدر بی این پی اورمارہ مراد بخش جلسے سے خطاب کرتے ہوئے

صدر بی این پی اورمارہ مراد بخش جلسے سے خطاب کرتے ہوئے

بی این پی (مینگل) اور جے یو آئی نےمؤرخہ 10 مارچ شام 5 بجے اورمارہ بازار بند کر کے مرکزی چوراہے پر بجلی و پانی کے عدم دستیابی کے حوالے سے مشترکہ جلسہ کیا۔ بی این پی اورمارہ کے صدر مراد بخش نے کہا کہ بجلی، پانی ہر کسی کی ضرورت ہے مگر ہمیں یہ بھی دستیاب نہیں۔ ثناءاللہ خلیل ملک نے کہا کہ بلوچستان کے وزیراعلیٰ ڈاکٹر عبدالملک  نے عوام کی امیدوں پر پورا نہ اتر کر اپنی پارٹی بی این پی (عوامی) کا سر جھکوا دیا ہے۔

جے یو آئی کے مولوی محمد امین نے اپنے خطاب میں کہا کہ اورمارہ کے مسئلے حل کرنے کی بجائے وزیراعلیٰ نے ان گنت مسئلے پیدا کر دئے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ نہ صرف بجلی، پانی کا مسئلہ ہے بلکہ زمین کے مسائل ہیں، تعلیم کے مسائل ہیں، منشیات کی لعنت ہمیں تحفے کے طور پر دے دی گئی ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ ان مسائل کے حوالے سے حکومت ان کے بات سننے کو تیار نہیں۔

اورمارہ میں گزشتہ تین دن سے بجلی نہیں ہے جس کی وجہ سے عوام میں حکومت کے خلاف غم و غصہ پایا جاتا ہے۔